Images (6)

چار لاکھ پچاس ہزار کے قریب ملکی غیرملکی سیاحوں نے نئے سیاحتی مقامات کی اب تک سیروتفریح کی

دور دراز علاقوں میں سیاحوں کو سٹے ہوم اور دوسری سہولیا ت فراہم کرنے کے لئے سیاحتی محکمہ وعدہ بند

سرینگر // رواں برس کے دوران وادی کے دور دراز علاقوں میں موجود صحت افزاء مقام کی سیروتفریح کے لئے چارلاکھ پچاس ہزار کے قریب ملکی غیرملکی سیاح سیروتفریح کے لئے گئے سردیوں کے ایام میں ملکی غیرملکی سیاحوں کی بڑی تعداد ان صحت افزاء مقام کی سیروتفریح کرنے کے انتظامیہ کی جانب سے ہرممکن انتظامات کرنے کایقین دلایاگیا ۔ کشمیر وادی میں سیاحت کو مسلسل فروغ مل رہاہے پہلے چندسیاحتی مقامات تک ملکی غیرملکی سیاح سیروتفریح کرسکتے تھے تاہم نئے سیاحتی مقامات کونقشے پرلانے کے ساتھ ہی ملکی او رغیرملکی سیاحوں نے ان دور درازسیاحتی مقامات کی سیروتفریح شروع کی۔ رواں برس کے دس ماہ کے دوران سرحدی ضلع کپوارہ کے مختلف سیاحتی مقامات جن میں کرناہ ٹیٹوال بنگس بھی شامل ہے تین لاکھ کے قریب ملکی غیرملکی سیاحوں کے سیروتفریح کی او رمقامی سیلانیوں کی بڑی تعداد نے ان صحت افزاء مقامات کی سیروتفریح کی سترہزار کے قریب سیاح وادی کے مختلف مقامات پرگئے ساتھ ہزار سیاح شمالی کشمیرکے سرحدی علاقے گریز کی سیروتفریح کے لئے گئے ۔وسطی ضلع گاندربل کے گلمرگ ،ناگرناگ او ردوسرے صحت افزاء مقامات کی سیروتفریح کے لئے د ولاکھ سے زیادہ ملکی غیرملکی سیاح سیروتفریح کے لئے گئے ملکی او رغیرملکی سیاح کی تعداد سردیوں کے ایام میں دور دراز صحت افزاء مقامات کے لئے خواہش مندہیں۔محکمہ سیاحت کے مطابق دوردراز علاقوں میں موجود سیاحتی مقامات کی سیرو تفریح کے لئے جانے والے ہرممکن سہولیت فراہم کرنے کی بھرپور کوشش کریگی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں