Download (13)

پی ایم مودی نے عمان کے سلطان ہیثم بن طارق سے بات چیت کی

تجارت اور سرمایہ کاری سمیت مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعاون کو وسعت دینے پر اتفاق

سرینگر // وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتہ کو عمان کے سلطان ہیثم بن طارق کے ساتھ بات چیت کی جس میں تجارت اور سرمایہ کاری سمیت مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعاون کو وسعت دینے پر توجہ مرکوز کی گئی۔ عمان کے سلطان جمعہ کو ایک سرکاری دورے پر دہلی پہنچے، جو خلیجی ملک کے سرکردہ رہنما کے طور پر ہندوستان کا ان کا پہلا دورہ ہے۔وزارت خارجہ کے ترجمان ارندم باگچی نے ایکس پر ایک پوسٹ میں کہا’’ہندوستان۔عمان اسٹریٹجک پارٹنرشپ کو فروغ دینا! وزیر اعظم نریندر مودی نے حیدرآباد ہاوس میں عمان کے مہتمم سلطان ہیثم بن طارق کا گرمجوشی سے استقبال کیا، جس سے دو طرفہ بات چیت کا مرحلہ طے ہوا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ایجنڈے میں دوطرفہ تعلقات کا جائزہ لینا اور دونوں ممالک کے درمیان مستقبل میں تعاون کیلئے راہیں طے کرنا شامل ہے۔ اس سے پہلے صبح میں، سلطان بن طارق کا راشٹرپتی بھون کے سامنے صحن میں ایک رسمی استقبال کیا گیا۔وزارت خارجہ نے اس ہفتے کے شروع میں اس سفر کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ مہاجم سلطان ہیثم بن طارق کا ہندوستان کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہندوستان اور سلطنت عمان کے درمیان سفارتی تعلقات میں ایک اہم سنگ میل کا نشان ہے۔ہندوستان اور سلطنت عمان اسٹریٹجک پارٹنر ہیں اور دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ تجارت اور سرمایہ کاری کے تعلقات پچھلے کچھ سالوں میں تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ہندوستان اور عمان کے درمیان سفارتی تعلقات 1955 میں قائم ہوئے اور 2008 میں اسٹریٹجک پارٹنرشپ میں اپ گریڈ ہوئے۔ وزارت خارجہ امور کی ریلیز کے مطابق، اس دورے نے علاقائی استحکام، ترقی اور خوشحالی پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے مستقبل میں تعاون کے راستے تلاش کرنے کا موقع فراہم کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں