Images (1)

پارلیمنٹ حملہ میں دئے گئے زخم ناقابل فراموش: راجناتھ سنگھ

ملک شدت پسندی کا مقابلہ کرنے میں کمزور ی نہیںدکھائے گا

سرینگر //پاکستان کے نام سخت پیغام دیتے ہوئے مرکزی وزیر دفاع راجنا تھ سنگھ نے کہا کہ ’’ہم پاکستان کے عسکریت پسندوں کی جانب سے دئے گئے زخموں کو کبھی نہیں بھول سکتے ہیں۔انہوں نے سال 2001 میں پارلیمنٹ حملہ کو بھارت پر سب سے بڑا قرار دیتے ہوئے کہا کہ ملک نئی پالیسیوں سے شدت پسندی کا مقابلہ کر رہا ہے۔ سال 2001میں ہوئے پارلیمنٹ حملے کی کی سالگرہ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر دفاع راجنا تھ سنگھ نے کہا کہ سال 2001میں آج ہی کے دن دہشت گردوں نے حملہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ حملے میں مارے گئے افراد کو تحسین پیش کرتا ہوں۔راجنا تھ سنگھ نے کہا کہ بھارت ان زخموں کو فراموش نہیں کرسکتا۔ آج بھارت نئی پالیسیوں سے شدت پسندی کا مقابلہ کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں شدت پسندی سے لڑنے والے اپنے سیکورٹی اہلکاروں کے سامنے بھی سر جھکتا ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے آئین کے تینوں شعبے کے کردار سے لے کر اس کی روح تک ہر چیز آئین میں شامل ہے۔ اگرچہ ہم نے گواہی دی کہ 1970 کے دہائی میں اقتدار کی علیحدگی کے وقار کے خلاف کس طرح کوششیں کی گئیںلیکن اس کا جواب آئین سے ہی سجاوٹ اور اختیار کی علیحدگی کے طور پر سامنے آیا ہے ۔ انہوں نے ملک کی دفاعی جدوجہد جاری رکھنے پر سیکورٹی فورسز کی جرات کی تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے خلاف سرحد پار سے ہونے والی شدت پسندی کی لعنت پر عالمی سطح پر روشنی ڈالی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں