Download (14)

وزیر اعظم کی قیادت میں نیا ہندوستان جدید، سائنسی اور جدید فوجداری انصاف کے نظام کو پروان چڑھا رہا ہے

فوری اور شفاف انصاف کی فراہمی کے مقصد کو پورا کرنے کیلئے ملک میں دنیا کا جدید ترین نظام انصاف ہوگا / امیت شاہ

سرینگر // بھارت میں دنیا کا جدید ترین نظام انصاف ہوگا کا اعلان کرتے ہوئے وزیر داخلہ امیت شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم مودی کی قیادت میں نیا ہندوستان ایک جدید، سائنسی اور جدید فوجداری انصاف کے نظام کو پروان چڑھا رہا ہے۔نیو انڈین ایکسپریس کے ساتھ ایک انٹرویو میں مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے نئے فوجداری قوانین اور ہندوستان کے نظام انصاف کو دنیا کے جدید ترین نظام میں تبدیل کرنے کی ان کی صلاحیت پر اپنے اعتماد کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ مودی کی قیادت میں نیا ہندوستان ایک جدید، سائنسی اور جدید مجرمانہ انصاف کے نظام کو پروان چڑھا رہا ہے۔ انہوں نے فوری اور شفاف انصاف کی فراہمی کے مقصد کو پورا کرنے کے لیے اس نئے عدالتی اپریٹس میں پولیس فورسز کو تربیت اور لیس کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ پارلیمنٹ نے گزشتہ سال دسمبر میں فوجداری انصاف کے نظام کو بہتر بنانے کیلئے لائے گئے تین نئے قوانین کی منظوری دی تھی۔ خیال رہے کہ اس سال کے شروع میں امیت شاہ نے کہا تھا کہ نئے قوانین سزا کے بجائے انصاف کی فراہمی پر مرکوز ہیں اور ان کے نفاذ سے ملک کے فوجداری انصاف کے نظام کو جدید ترین اور سائنسی قانون میں تبدیل کر دیا جائے گا۔امیت شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں، بھارت ڈیجیٹلائزیشن کی طرف ایک بڑی چھلانگ لگا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت ہر شہری کیلئے انٹرنیٹ کو محفوظ بنا کر سائبر کامیاب معاشرہ بنانے کیلئے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ سائبر جرائم کی روک تھام مودی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔شاہ نے فورس کے اندر ہموار اور محفوظ ڈیجیٹل خدمات کو یقینی بنانے میں آسام رائفلز کی مشترکہ کوششوں کی تعریف کی۔۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ دور میں بڑھتے ہوئے سائبر حملوں نے اپنے نیٹ ورکس کو ناپاک مداخلت کرنے والوں، ہیکنگ اور دیگر سائبر دراندازیوں سے محفوظ رکھنا ضروری بنا دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں