Download (13)

وادی کے میدانی علاقوں میں شدید بارشیں بالائی حصوں میں برف باری

سرینگر لہہ شاہرہ آمد رفت کے لئے بند،21فروری تک موسم خراب رہنے کا امکان

سرینگر ک// وادی کشمیر کے میدانی علاقوں میں شدید بارشوں کا سلسلہ وقفے سے جاری جبکہ پہاڑی علاقوں میں اتوار کی صبح سے ہی برف باری کا سلسلہ برابر جاری ہے اس دوران تازہ برف باری کے نتیجے میں یہاں درجہ حرارت میں نمایا ککمی بھی واقع ہوئی ہے ۔ادھر محکمہ موسمیات نے21۱فروری تک یہاں موسم خراب رہنے کی پیش گوئی کی ہے ۔ وادی کشمیر میں محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے عین مطابق میدانی علاقوں میں اتوار کی صبح سے ہی بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا جو وقفے وقفے سے شام تک جاری تھا اس دوران صبح سویرے سے یہاںپہاڑی علاقوں میں اچھی خاصی برف باری کے اطلاعات موصول ہوئی ہیب ۔کشمیر نیوز سروس کے نامہ نگاروں نے بتایا کہ وادی کے شمال و جنوب میں میدانی علاقوں میں بارشیں جبکہ پہاڑی علاقوں میں برف باری ریکارڑ کی گئی ہے ۔ حکام نے اتوار کو یہاں بتایا کہکشمیر کے بالائی علاقوں میں تازہ برف باری ہوئی یہاں تک کہ وادی کے میدانی علاقوں میں بارش ہوئی جس سے درجہ حرارت میں کئی ڈگری تک کمی واقع ہوئی۔انہوں نے کہاکہ کشمیر کے تمام پہاڑی اور پہاڑی علاقوں میں صبح سے ہی برف باری کی اطلاع ملی ہے۔انہوں نے بتایا کہ وادی کے میدانی علاقوں بشمول سری نگر شہر میں ہلکی سے درمیانی بارش ہوئی۔حکام نے بتایا کہ برف باری نے مرکزی وادی کو دور دراز کے علاقوں جیسے کپواڑہ ضلع کے ماچل، بانڈی پورہ ضلع میں گریز اور گاندربل ضلع کے سونمرگ سے جوڑنے والی کئی سڑکیں بند کر دی ہیں۔کشمیر کے شوپیاں ضلع کو جموں ڈویژن کے راجوری پونچھ سے جوڑنے والی مغل روڈ بھی برف باری کی وجہ سے بند ہو گئی ہے۔تاہم، کچھ دیر پہلے تک سری نگر جموں قومی شاہراہ پر کچھ ٹریفک تھی۔محکمہ موسمیات نے اگلے تین دنوں کے دوران وادی کشمیر میں برفباری یا بارش کی صورت میں درمیانے سے بھاری بارش کی پیش گوئی کی ہے۔ادھر باری برف باری کے پیش نظر سری نگر لہہ شاہراہ کو بھی گاڑیوں کی آمد رفت کے لئے بند کر دیا گیا ہے خیال رہے محکمہ موسمیات وادی میں شدید برف باری اور بارشوں کی پیش گوئی ہے تاہم سرینگر جموں شاہراہ پر ٹریفک رواں دواں تھا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں