Images (3)

نوجوان صلاحیتوں کابھر پور مظاہراہ کرکے ملک کو ترقی کی طرف لے جائے /منوج سنہا

سبز انقلاب کسی بھی ملک ریاست کے لئے معاشی اوراقتصادی ترقی کاپہلا زینہ

سرینگر // سبز انقلاب کو ملک ریاستوں مرکزی زیر انتظام علاقوں کی معاشی اقتصادی ترقی کاپہلازینہ قرار دیتے ہوئے جموںو کشمیر کے ایل جی نے کہاکہ ڈگریاں حاصل کرنے والے طلبہ وطالبات اپنی صلاحیتوں کوبروئے کار لاکر زرعی سیکٹر میں جدیدت لانے اور ملک کی پیداوار میں اضافہ کرنے کے لئے اپنی خدمات انجام دینگے نوجوانوں کوملک کاسرمایہ قرار دیتے ہوئے ان سے تلقین کی کہ وہ اچھاکرے اسکے مثبت نتائج برآمد ہونے وزیر اعظم نے ملک میں ایسے اقدامات اٹھائے کہ کسانوں کی زندگی بدل گئی ہے زراعت کی ترقی جموں وکشمیرکے لئے انتہائی لازمی ہے ۔باغ گل لالہ کی ذکر کرتے ہوئے کہاکہ پھولوں کی مختلف اقسام نے کاروبار میں بھی چار چاندلگادیئے ۔ شیر کشمیر زرعی یونیورسٹی جموں کے آٹھویں کنوکیشن کے سلسلے میں منعقد کی گئی تقریب پر تقریر کرتے ہوئے جموں و کشمیرکے ایل جی منوج سنہا نے پانچ سو 90کے قریب طلبہ میں ڈگریاں تقسیم کی اور دس طلبہ کوبہتر کا رکردگی کامظاہراہ کرنے پر گولڈ مڈل سے بھی نوازاہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ۔لیفٹننٹ گورنر نے کہا اسناد حاصل کرنے والوں میں 59فیصدلڑکیاں ہے جو اس بات کی عکاسی ہے کہ جموں و کشمیر سمیت ملک کی لڑکیاں اپنے ملک کو جدیدخطوط پراستوارکرنے اور اسے ترقی کے منزلوں پرلے جانے میں اپنابھرپور رول ادا کر رہے ہیں ۔انہوںنے سالانہ کنوکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ زرعی پیداوار کسی بھی ملک ریاست یامرکزی زیر انتظام علاقے کے لئے انتہائی لازمی ہے او ردور جدید میں زرعی یونیورسٹیوں کارول انتہائی اہمیت کی حامل ہواکرتی ہے ۔لیفٹننٹ گورنر نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاملک کے کسانوں کی زندگی بدل گئی زرعی شعبہ میں انقلابی نوعیت کے اقدامات اٹھائے ہے او رجموں وکشمیرمیں زراعت کوفروغ دینے کے لئے 33کروڑروپے مختص کئے گئے ہے۔ انہوںنے کہا180ڈئری فارم قائم کئے گئے پچھلے چار برسوں کے دوران جموںو کشمیرمیںزرعی پیداوار میں اضافہ کرنے کے لئے سرکار نے کسانوں کو ہر طرح کی امداد فراہم کرنے اور انہیں جدید ٹیکنالوجی دستیاب رکھنے کے لئے اقدات اٹھائیں ۔ایل جی نے کہاکہ وزیراعظم کے بہتراقدامات کی وجہ سے ملک کے کسانوںکی زندگی بدل گئی اوران کی امدانی میں دوگنااضافہ ہوا ہے اور ہر سالانہ کے بینک کھاتوں میں چھ ہزار روپے جمع کئے جاتے ہے ۔انہوںنے کہاکہ 590کے قریب اسناد حاصل کرنے والے طلبہ وطالبات بھر پور مظاہراہ کرکے جموں و کشمیرمیں نہ صرف زرعی پیداوار میںاضافہ کرنے بلکہ جدیدٹیکنالوجی کو بروئے کا رلانے میں اپنی خدمات انجام دینگے ۔انہوںنے کہاکہ جدیدیت کے روح جان کودن بدن تقویت ملتی جارہی ہے اور ہم دور جدید کے چلینجوں کاہم آہنگ بننے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھا نے کی بھر پورکوشش کررہے ہیں اور ا سمیں کامیابی بھی مل رہی ہے ۔نوجوانوں کو قوم کاسرمایہ قرار دیتے ہوئے انہوںنے کہاکہ نوجوان ملک کے لئے اپنے اپکووقف کریں ہم نے ایک مضبوط مستحکم ملک کے لئے اپنی بہترصلاحیتوں کابھرپور مظاہراہ کرنا ہوگا۔ انہوں نے نوجوانوں پرزوردیاکہ وہ اچھاکرے اور ا سکے مثبت نتائج بھی برآمد ہونے زرعی یونیورسٹی کی کا رکردگی کواطمنان بخش قرار دیتے ہوئے منوج سنہا نے کہاکہ داخلہ لینے والے یاتعلیم سے فارغ ہونے والے طلبہ کوچاہئے کہ و ہ دانش گاہ سے نکلنے کے بعد اپنے آپ کو اسکام کے لئے وقف کرے جس کے لئے انہوں نے راتوں کی نیندحرام کردی اور ڈگری مکمل کر کے اپنے مستقبل کو تاب ناک بنانے کا خواب دیکھاہے۔ انہوںنے داخلہ لینے والے طلبہ سے کہاکہ وہ اپنے آپ کو جدید چلینجوں کامقابلہ کرنے کاہم آہنگ بنائے ان پربہت ساری ذمہ داریاں ہیں جنہیں نبہانے کے لئے انہیں مضبوط مستحکم ہوناہوگا۔ قوم کی بھاگ دوڑ کل ان کے ہاتھ میںہوگی وہ جموں وکشمیرکوہی نہیں بلکہ پورے ملک کوترقی کی منزلوں پرلے جانے کے لئے بہتررول اد کریں۔ ادھرملک کے نائب صدر جگدیپ دنکر سالانہ کنوکیشن میں موسم کی خرابی کی وجہ سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت نہیں کرسکے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں