Download (15)

ملک کی سیکورٹی اور سالمیت کے ساتھ ساتھ قوم کو تمام خطرات سے محفوظ رکھنا ہماری ترجیح / راجناتھ سنگھ

دفاعی شعبہ کو مزید تقویت بخشنے کیلئے فوجی سازوسامان کی خریداری کیلئے 802 کروڑ روپے منظور
سرحدی علاقوں کوترقی دینے کی ضرورت کیونکہ موجودہ حالات میں کسی بھی وقت جنگ کے امکانات کو مسترد نہیں کیا جا سکتا

سرینگر // دفاعی شعبہ کو مزید تقویت بخشنے کیلئے وزارت دفاع نے فوجی سازوسامان کی خریداری کیلئے 802 کروڑ روپے کے دو معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔ اس موقعہ پر وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ موجودہ دور میں سرحدی علاقوں میں جنگ کے خطرات کو رد نہیں کیا جا سکتا ہے اس لئے علاقوں کی جانب بہترین رابطے کو بڑھائوا دینا اور سرحدی علاقوں کی ترقی وقت کی ضرورت ہے ۔ نئی دلی میں وزارت دفاع نے فوجی سازوسامان کی خریداری کیلئے 802 کروڑ روپے کے دو معاہدوں پر دستخط کیے ہیں۔اس موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ قوم کو تمام خطرات سے محفوظ رکھا جائے۔ ہماری مسلح افواج تیار ہیں اور یہ دیکھ کر خوشی ہوئی کہ بارڈر روڈز آرگنائزیشن اس تعلق سے غیر معمولی کام کررہی ہے۔راجناتھ سنگھ نے زور دے کر کہا کہ اس کا مقصد مستقبل کے چیلنجوں سے موثر طریقے سے نمٹنے کے لیے ایک مضبوط اور خود انحصاری ‘نیو انڈیا’ کی تعمیر کرنا ہے جو مسلسل بدلتے ہوئے عالمی منظر نامے کی وجہ سے پیدا ہو سکتے ہیں۔دنیا آج کئی تنازعات کا مشاہدہ کر رہی ہے۔ ہندوستان ہمیشہ جنگ کے خلاف رہا ہے۔ یہ ہماری پالیسی ہے۔ حال ہی میں، وزیر اعظم نریندر مودی نے دنیا کی توجہ اس عزم کی طرف مبذول کرائی جب انہوں نے کہا کہ یہ جنگ کا دور نہیں ہے۔وزیر دفاع نے سرحدی علاقوں میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی کے ذریعے ملک کی سلامتی کو تقویت دینے میں بی آر او کے ذریعے ادا کیے جانے والے اہم کردار کو مزید اجاگر کیا۔حال ہی میں، ہماری افواج نے شمالی سیکٹر میں موثر طریقے سے دشمن کا مقابلہ کیا اور بہادری اور بردباری کے ساتھ حالات سے نمٹا۔ یہ خطے میں کافی بنیادی ڈھانچے کی ترقی کی وجہ سے ممکن ہوا ہے۔ یہ ہمیں دور دراز کے علاقوں کی ترقی کے لیے مزید حوصلہ دیتا ہے۔اس موقع پر وزیر دفاع نے نئی ٹیکنالوجیز پر ایک کمپنڈیم بھی جاری کیا۔ اس میں سڑکوں، پلوں، ہوائی اڈوں اور سرنگوں کے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر میں بی آر او کی طرف سے اپنائی جانے والی جدید ترین ٹیکنالوجیز کو شامل کیا گیا ہے تاکہ موسم کی خراب صورتحال کے ساتھ دور دراز اور مخالف خطوں کے اثرات کو رد کیا جا سکے۔ مرکزی وزیر دفاع راجنا تھ سنگھ نے کہا کہ موجودہ دور میں سرحدی علاقوں کو ترقی دینے کی ضرورت ہے کیونکہ موجودہ حالات میں کسی بھی وقت کسی بھی جنگ کے امکانات کا مسترد نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ راجناتھ سنگھ نے کہا کہ یہ فخر کی بات ہے کہ ہمارے پاس ترقی میں تعاون کیلئے بارڈر روڈز آرگنائزیشن ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرحدی علاقوں کی ترقی کے عمل میں کچھ خاص ضرورتیں ہیں جن کا خیال رکھنا ضروری ہے، ہم نے ان ضروریات پر توجہ دی اور زمینی سطح پر ان پر کام کیا، ہم نے دیکھا کہ ان علاقوں میں سرمائے کی ضرورت ہے، جو نہیں ہو سکتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں