Download (4)

مالدیپ بھارت کے مابین اختلافات اور کشیدگی کے سلسلے میں وزارت خارجہ کوسنجیدہ نوٹس لیناچاہئے

چین نے بھارت کوکئی اطراف سے غیر کے رکھاہے معاملات پرُ امن طریقے سے حل کرنے کے خواہش مند/فاروق عبداللہ

سرینگر// مالدیپ بھارت کے مابین تناؤ اور کشیدگی پر حیرانگی کا اظہار کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے صدر نے کہاکہ بھارت نے ہمیشہ مالدیپ کی مددکی وزارت خارجہ کوکشیدگی اور تناؤ کے معاملے کاسنجیدہ نوٹس لیناچاہئے چین نے بھارت کوغیرکے رکھاہے ہم چین کے ساتھ معاملات کو پرُامن طریقے سے حل کرنے میںیقین رکھتے ہیں ملک کے پہلے وزیراعظم و رکمنسٹ پارٹی کے سینئرترین قائد نے دونوں ممالک کے مابین پنچ شیر کے تحت دوستی قائم رکھنے پردستخط کئے تھے ۔ بھارت اور مالدیپ کے مابین کشیدگی کا ماحول اس وقت دیکھنے ہوملاجب ملک کے وزرء اور وزارت کونسل سے ڈراپ کیاگیاکہ انہوں نے وزیراعظم نریندر مودکے بارے میں ناشائستہ الفاظ کااستعمال کیاتھا جسکابھار ت سنجیدہ نوٹس لیااور مالدیپ کے سفریر کونئی دہلی میں وزارت خارجہ کے دفتر بلاکر احتجاج درج کیا۔جموںو کشمیرکے سابق وزیراعلیٰ او رسابق صدر ڈاکٹرفاروق عبداللہ نے بھارت او رمالدیپ کے درمیان کشیدگی پرحیرانگی کااظہارکیا مالدیپ پرجب بھی مصیبت نازل ہوئی بھارت نے ان کی مددکی ایک وہ بھی دور تھاجب کئی شر پسندعناصر نے مالدیپ حکومت کوگرانے کے لئے اقدامات اٹھائیں۔بھار ت کی فوج وارد ہوئی شرپسندعناصر کے خلاف کارروائی عمل میںلانے کے بعد واپس لوٹ آئی ۔سابق وزیر اعلی نے مالدیپ او ربھارت کے مابین کشیدگی پراظہار کرتے ہوئے کہا وہ اس معاملے کوسنجیدہ نوٹس لے کہ کن وجوہات کی بناء پر اسطرح کے حالات پیداہوئے ۔سابق وزیراعلیٰ نے چین کی کارروائیوں پرتشویش کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ یہ چین نے ملک کوکئی اطراف سے گھیر ے رکھاہے ملک کے پہے وزیراعظم نے چین کی کمنسٹ پارٹی کے بانی چوان لائن کے ساتھ بقایہ باہم اصولوںکے تحت دوسری کوقائم رکھنے مسائل کے حل کرنے پردستک کئے تھے اب چین بدل گیاہے حالات واقعات تبدل گئے ہے ہم چین کے ساتھ بات چیت کے زریعے حل کرنے میں یقین رکھتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں