Download

عبوری بجٹ ترقی پر مبنی ہوتے ہوئے غریب لوگوں کی فلاح و بہبود پر مرکوز / چھگ

وزیر اعظم کی قیادت میں جموں کشمیر کی تصویر ہی بالکل بدل گی

سرینگر//وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں سرکار نے جموں کشمیر کی تصویر ہی بالکل بدل دی کا دعویٰ کرتے ہوئے بی جے پی قومی جنرل سیکرٹری اور جموں و کشمیر کے انچارج ترون چگ نے کہا کہ مرکز کی طرف سے اعلان کردہ عبوری بجٹ ترقی پر مبنی ہوتے ہوئے غریب لوگوں کی فلاح و بہبود پر مرکوز ہے۔سی این آئی کے مطابق مرکز کی جانب سے عبوری بجٹ پیش کرنے پر اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے بی جے پی قومی جنرل سیکرٹری اور جموں و کشمیر کے انچارج ترون چگ نے کہا کہ مرکز کی طرف سے اعلان کردہ عبوری بجٹ ترقی پر مبنی ہوتے ہوئے غریب لوگوں کی فلاح و بہبود پر مرکوز ہے۔چھگ نے کہا کہ بجٹ میں’رام راجیہ‘کا ویژن ہے یہاں تک کہ یہ خواتین اور کم مراعات یافتہ طبقے کا خیال رکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ ایک ترقی یافتہ ہندوستان کے عزم کے ساتھ ’آتمانیر بھر بھارت‘ کے ہدف کو حاصل کرنے کی بات کرتا ہے۔قومی جنرل سکریٹری نے وزیر اعظم نریندر مودی، مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتارمن کا ’’ترقی پسند بجٹ جو فلاح و بہبود کا خیال رکھتا ہے اور ملک میں ہر قسم کے لوگوں کی ترقی کی بات کرتا ہے ‘‘کیلئے شکریہ ادا کیا۔انہوں نے یہ کہتے ہوئے اختتام کیا کہ گزشتہ ایک دہائی میں وزیر اعظم نریندر مودی نے 25 لاکھ لوگوں کو غربت سے نکالا ہے جبکہ ان کی قیادت میں ملک نے ترقی اور ترقی کے تمام ریکارڈ توڑ دیے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج کشمیر میں صورتحال بدل گئی ہے اور کوئی ہڑتال نہیں ہوئی، پتھراؤ نہیں ہوا اور عسکریت پسند بھاگ رہے ہیں۔چھگ نے تین سیاسی خاندانوں پر الزام لگایا کہ انہوں نے کئی دہائیوں کے دوران جموں و کشمیر کے وسائل کو لوٹا اور تمام مصائب کو سابقہ ریاست کے لوگوں پر پہنچایا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وادی میں تین دہائیوں سے زیادہ کا انتشار ان خاندانوں کی غلط پالیسیوں کا نتیجہ تھا۔انہوں نے کہا کہ جوریاں کے لوگ جانتے ہیں کہ یہ این سی حکومت تھی جس نے قومی پرچم لہرانے میں رکاوٹیں کھڑی کیں اور ہاتھوں میں ترنگا اٹھانے والوں کے خلاف گولیوں کا استعمال کیا۔ چگ نے مزید کہا، ’’ان لوگوں میں حب الوطنی کا ایسا جذبہ تھا کہ انہوں نے اپنی جان دینے کو ترجیح دی لیکن ترنگا ہاتھ میں اٹھانے میں کوئی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں