WhatsApp Image 2023-02-01 at 9.13.36 PM

شہریوں کو بااختیار بنانے کیلئے ہر ممکن کوشش کی جا رہی ہے: لیفٹیننٹ گورنر

شہریوں کو بااختیار بنانے کیلئے ہر ممکن کوشش کی جا رہی ہے: لیفٹیننٹ گورنر

سٹی رپورٹر مشتاق پلوامہ

سرینگر/ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے سول سیکرٹریٹ میں ”ایل جی ملاقات لائیو پبلک گریوینس ہیرنگ “ کے دوران لوگوں سے بات چیت کی اور ان کی شکایات سنیں ۔لیفٹیننٹ گورنر نے متعلقہ انتظامی سیکریٹریوں ، ڈپٹی کمشنروں اور دیگر سینئر افسران کے ذریعہ درخواست گزاروں کی شکایات پر کی گئی کارروائی کی تعریف کی ۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا ” ہمارا بنیادی مقصد معیار کی شکایات کا ازالہ ، خدمات کی فراہمی کے طریقہ کار کی مسلسل نگرانی ، عام آدمی کی فلاح و بہبود اور ترقی کیلئے جوابدہی کو یقینی بنانا ہے ۔ “لیفٹیننٹ گورنر نے مزید کہا کہ شہریوں کو بااختیار بنانے اور انہیں معاشرے میں بڑا کردار ادا کرنے کے قابل بنانے کی ہر ممکن کوشش کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مختلف مداخلتیں اور ای گورننس ٹولز اس بات کو یقینی بنا رہے ہیں کہ ہمارے ترقیاتی پروگراموں ، مرکزی سیکٹر کی مختلف اسکیموں کے ثمرات لوگوں تک پہنچیں ۔سماجی تحفظ کی اسکیموں کے فائدے کیلئے زیر التوا کیسوں کے بارے میں مختلف شکایات کنندگان کی جانب سے موصول ہونے والی شکایات کا نوٹس لیتے ہوئے لفٹینٹ گورنر نے انتظامی سیکریٹریوں اور ڈپٹی کمشنروں کو ہدایت دی کہ وہ تمام اقدامات پر سختی سے عمل درآمد کریں اور ایسے معاملات کی نگرانی کو یقینی بنایا جائے تا کہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ تمام اہل افراد تک فوائدپہنچیں ۔خانپورہ میں کھیل کے میدان کی ترقی کے سلسلے میں بارہمولہ سے تعلق رکھنے والے شیخ خورشید احمد کی شکایات کا جواب دیتے ہوئے لفٹینٹ گورنر نے ڈپٹی کمشنر سے کہا کہ وہ علاقے میں کھیلوں کی سرگرمیوں کی سہولت فراہم کرنے کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اس کا ازالہ کریں ۔ ڈی سی بارہمولہ نے بتایا کہ اس سلسلے میں خانپورہ میں کھیل کے میدان کی ترقی کیلئے پہلے ہی سے کام جاری ہے ۔رام بن کے احدواہ کے دور دراز علاقے کی رہنے والی محترمہ جیوتی بالا نامی شکایت کنندہ کے معاملے پر اپنی پنچائت میں ویٹر نری علاج کی سہولیات تیار کرنے کیلئے لفٹینٹ گورنر نے متعلقہ محکمہ کو ہدایت دی کہ وہ متعلقہ پنچائت سے نوجوانوں کو ویٹر نری طبی امداد کی تربیت دیں ۔پی ایم اے وائی اسکیم کے تحت فائدہ حاصل کرنے سے متعلق کشتواڑ سے تعلق رکھنے والے مسٹر بدیا لال کے مسئلہ کو حل کرتے ہوئے لفٹینٹ گورنر کو بتایا گیا کہ شکایت پر توجہ دی گئی ہے اور درخواست گذار کو اسکیم کے تحت پہلی قسط مل گئی ہے ۔یہ بھی بتایا گیا کہ اہل درخواست دہندگان کو فائدہ کی توسیع میں تاخیر کے ذمہ دار افسران کے خلاف کارروائی شروع کر دی گئی ہے ۔اس موقع پر محترمہ ریحانہ بطول کمشنر /سیکرٹری ، عوامی شکایات نے جے کے ۔ اگرامس پر موصول ہونے والی شکایات کی پیش رفت اور صورتحال کے بارے میں آگاہ کیا ۔لیفٹیننٹ گورنر نے ان تمام لوگوں کی کوششوں کو سراہا جس کے نتیجے میں موصول ہونے والی تمام شکایات کو 96 فیصد نمٹایا گیا ۔ انہوں نے عوامی شکایات کے ازالے کے طریقہ کار کو ہر سطح پر مزید ذمہ دار بنانے کیلئے سرشار اقدامات کرنے پر بھی زور دیا ۔مختلف درخواست دہندگان نے اپنی شکایات کے فوری ازالے کے لئے لفٹینٹ گورنر کی زیر قیادت یو ٹی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا ۔چیف سیکرٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا ، انتظامی سیکریٹریز ، ڈویژنل کمشنرز ، ڈپٹی کمشنرز ، ایس ایس پیز ، ایچ او ڈیز اور دیگر سینئر افسران ذاتی طور پر اور عملی طور پر بات چیت کے دوران موجود تھے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں