Download (6)

سیاحتی اور مذہبی مقامات پر بنیادی ڈھانچے کی ترقی کیلئے جموں و کشمیر میں 450 کروڑ روپے سے زیادہ خرچ

عوام کو جانا چاہیے، یہ ہمارے ہندوستان کا حصہ ،سیاح جموں و کشمیر کا دورہ کرنے کیلئے بے تاب / جی کیشن ریدی
جموں کشمیر میں نمایاں تبدیلی کی واٰضح مثال یہ ہے کہ ہوائی اڈوں اور سیاحتی مقامات پر سیاحوں کی ’’ریکارڈ آمد ‘‘درج ہوئی

سرینگر // وزیر اعظم نریندر مودی نے کی قیادت میں جموں کشمیر میں نمایاں تبدیلی آئی جس کی واٰضح مثال یہ ہے کہ ہوائی اڈوں اور سیاحتی مقامات پر سیاحوں کی ’’ریکارڈ آمد ‘‘درج ہوئی کی بات کرتے ہوئے وزیر سیاحت جی کشن ریڈی نے کہا کہ سیاحتی اور مذہبی مقامات پر بنیادی ڈھانچے کی ترقی کیلئے جموں و کشمیر میں 450 کروڑ روپے سے زیادہ خرچ کیے گئے ہیں ۔ سی این آئی کے مطابق حکومت ہند کی ’پرشاد‘ اور ’سودیش درشن‘ اسکیموں کے تحت،جموں و کشمیر میں مذہبی مقامات سمیت سیاحتی مقامات پر بنیادی ڈھانچے کی ترقی کیلئے اب تک 450 کروڑ روپے سے زیادہ خرچ کیے جا چکے ہیں۔ان باتو ں کا اعتراف راجیہ سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں وزیر سیاحت جی کشن ریڈی نے کیا وزیر موصوف نے کہا کہ ’’پرشاد‘‘ اسکیم کا بنیادی مقصد یاتریوں اور ثقافتی ورثہ کے شوقین افراد کیلئے زیادہ سے زیادہ افزودہ تجربے کو یقینی بنانا، یاتریوں اور ثقافتی مقامات پر سیاحت کے بنیادی ڈھانچے کو تیار کرنا ہے جبکہ ‘سودیش درشن’ اسکیم کا مقصد تھیم پر مبنی سیاحوں کو ترقی دینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس اسکیم کے تحت جموں و کشمیر میں سال 2016-17میں حضرت بل درگاہ پر ترقی کے منصوبے کو منظور کیا گیا تھا جس کی منظور شدہ لاگت 40.46 کروڑ روپے تھی اور منظور شدہ لاگت میں سے 34.30 کروڑ روپے جاری کیے گئے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جموں و کشمیر کے سانبہ ضلع میں اتربھنی اور پورمنڈل کو پرشاد اسکیم کے تحت ترقی کیلئے نئے مقامات کے طور پر شناخت کیا گیا ہے۔’’سودیش درشن‘‘‘اسکیم کے بارے میں، وزیر نے بتایا کہ سابقہ جموں و کشمیر ریاست کیلئے سال 2016-17میں 448 کروڑ روپے کی تخمینہ لاگت سے 6 پروجیکٹوں کو منظوری دی گئی تھی۔ ان پروجیکٹوں میں 77.33 کروڑ کی منظور شدہ لاگت سے جموں۔سرینگر،پہلگام،بھگوتی نگر،اننت ناگ،سلام آباد اوڑی،کرگل لیہہ کی ترقی شامل ہے جس میں سے 67.37 کروڑ اسٹینڈ جاری کیے گئے ہیں اور جموں،راجوری،شوپیان،پلوامہ میں سیاحتی سہولیات کی ترقی کی منظوری دی گئی ہے۔ 81.60 کروڑ روپے کی لاگت ہے جس میں سے 67.35 کروڑ جاری کیے گئے ہیں۔اسکیم کے تحت منظور کیے گئے دیگر چار پروجیکٹوں میں سیاحتی سہولیات کی ترقیسال 2014میں سیلاب میں تباہ ہونے والوں کے بدلے اثاثوں کی تعمیر، پی ایم ڈیولپمنٹ پیکیج کے تحت 90.43 کروڑ روپے کی لاگت سے، منتلائی اور سدھما دیو میں سیاحتی سہولیات کی ترقی شامل ہیں۔ مرکزی وزیر جی کشن ریڈی نے کہا کہ جموں و کشمیر میں سیاحت میں ’’ریکارڈ اضافے ‘‘کے بعد، کچھ سیاست دان بھی وادی اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کے دیگر حصوں میں فرصت کا وقت گزار رہے ہیں۔۔مرکزی وزیر سیاحت نے کہا ’’آزادی کے بعدجموں و کشمیر میں سیاحت کی تعداد میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے۔ اگر ہم ایک سال کے اعداد و شمار پر نظر ڈالیں تویہ جموں و کشمیر میں تقریباً 1.8 کروڑ سیاح تھے۔‘‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں