Download (8)

جموں کشمیر میں لوک سبھا انتخابات کیلئے 12ہزار سے زائد الیکشن ڈیوٹی پر معمور گاڑیاں جی پی ایس ٹریکر آلات سے لیس ہوں گی

سرینگر//لوک سبھا انتخابات کے حوالے سے جموں کشمیر میں سات سو سے زیادہ پولنگ سٹیشن قائم کئے جارہے ہیں جبکہ انتخابی ڈیوٹی کیلئے 12ہزار سے زائد گاڑیوں کو کام پر لگایا جائے گا جن میں ٹریکنگ آلات جی پی ایس ٹریکر نصب کئے جائیں گے ۔ وائس آف انڈیا کے مطابق جموں و کشمیر میں لوک سبھا انتخابات کے دوران ای وی ایم اور وی وی پی اے ٹی کی نقل و حرکت کی ریئل ٹائم ٹریکنگ اور نگرانی کے لیے 12,000 سے زیادہ الیکشن ڈیوٹی گاڑیاں گلوبل پوزیشننگ سسٹم (جی پی ایس) ٹریکر ڈیوائسز سے لیس ہوں گی۔اس مقصد کے لیے ڈسٹرکٹ الیکشن آفیسر (ڈی ای او) اور چیف الیکٹورل آفیسر (سی ای او) کی سطح پر ایک جی پی ایس کنٹرول روم بھی قائم کیا جائے گا، جہاں ای وی ایم اور وی وی پی اے ٹی کی نقل و حرکت پر نظر رکھی جائے گی۔ وہیکل ٹریکنگ سسٹم اور دیگر متعلقہ انفراسٹرکچر اور ایپلی کیشنز کے ذریعے ٹریک کیا جاتا ہے۔یہ نظام الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں (EVMs) اور ووٹر ویریفائی ایبل پیپر آڈٹ ٹریلز کے بارے میں ان کی نقل و حمل، اسٹوریج، سیکورٹی وغیرہ کے بارے میں الیکشن کمیشن آف انڈیا کی ہدایات کے مطابق لگایا جا رہا ہے، جس کا مقصد انتخابی عمل میں شفافیت کویقینی بنانا ہے۔ ادھر جموں و کشمیر کے چیف الیکٹورل آفیسر کے دفتر نے پہلے ہی اس سلسلے میں کارروائی شروع کر دی ہے۔پولنگ سے پہلے کے دنوں اور پولنگ کے دن تمام EVMs اور VVPATs کی اینڈ ٹو اینڈ موومنٹ (بشمول ریزرو ای وی ایم اور وی وی پی اے ٹی) کی ہر وقت احتیاط سے نگرانی کی جائے گی، جس کے لیے تمام پولنگ پارٹیوں یا سیکٹر افسران کی گاڑیاں لازمی طور پر GPS ٹریکنگ کے ساتھ نصب کیا جائے گا۔ ای وی ایم اور وی وی پی اے ٹی کو لے جانے والی گاڑیوں میں استعمال ہونے والے جی پی ایس سے چلنے والے وہیکل ٹریکنگ سسٹم کے ذریعے ای وی ایم اور وی وی پی اے ٹی کی نقل و حرکت کی ریئل ٹائم ٹریکنگ اور نگرانی ہوگی۔باضابطہ طور پر دیکھا جائے تو GPS ٹریکر ڈیوائسز کے ساتھ تمام ضروری ہارڈ ویئر کو الیکشن ڈیوٹی گاڑیوں میں نصب یا نصب کیا جانا ہے جیسا کہ رجسٹریشن آفیسرز (ROs) اور DEO نے تفویض کیا ہے۔ گاڑیوں کی عارضی تعداد 12,500 ہوگی۔ یہ ایک عارضی نمبر ہے اور یہ تعداد انتخابات کے اعلان کے بعد شمار کی جانے والی اصل ضروریات کی بنیاد پر بڑھ یا گھٹ سکتی ہے۔جی پی ایس ٹریکر ڈیوائسز کی تنصیب گاڑیوں کے اندر کی جانی ہے۔ گاڑیاں جموں و کشمیر کے مختلف مقامات پر رکھی جائیں گی۔ GPS ٹریکر ڈیوائسز، RFP کے مطابق، متعلقہ ROs اور DEOs کی ہدایت کے مطابق محدود وقت کی ونڈو میں انسٹال کی جانی ہیں۔ یہ ضروری ہے کہ GPS ٹریکر ڈیوائسز کو انسٹال، سیٹ اپ اور ٹربل شوٹ کرنے کے لیے فی 40 گاڑیوں پر کم از کم ایک شخص (تکنیکی ماہر) ہونا چاہیے۔700 سے زیادہ پولنگ سٹیشنوں کے لیے، خدمات – پولنگ کے دن سے شروع ہونے والی مدت کے درمیان مکمل طور پر فعال اور آپریشنل – کو یقینی بنایا جائے گا۔ الیکشن ڈیوٹی گاڑیوں کے لیے جی پی ایس پر مبنی گاڑیوں سے باخبر رہنے کا حل، سی ای او جموں کے دفتر میں محفوظ لاگ ان کے ساتھ ایک ویب پر مبنی پورٹل کے ساتھ فراہم کیا جائے گا۔ہر GPS ٹریکر ڈیوائس کو متعلقہ DEOs اور CEO J&K کے ذریعے فراہم کیے جانے والے متعلقہ ‘اوصاف ڈیٹا’ کے ساتھ میپ کیا جانا ہے۔گاڑیوں کے اندر GPS ٹریکر ڈیوائسز کی انسٹالیشن، کمیشننگ اور کنفیگریشن اور VTS (وہیکل ٹریکنگ سسٹم) سافٹ ویئر کے ساتھ ان کے انضمام کو یقینی بنایا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں