Download (14)

جموں وکشمیر میں اس طرح کے ایک ہزار کیس سائبر پولیس کے پاس درج

ملک بھر میں سائبر کرائم کے 1.13میلین کیس درج

سرینگر //ملک بھر میں سائبر جرائم میں بے تحاشہ اضافہ جموں وکشمیر میں ایک ہزار کے قریب سائبرکیس درج ،سائبرکرائم پولیس نے لوگوں سے تلقین کی کہ وہ سائبر کرائم انجام دینے والوں سے ہوشیاررہے اور ایسے عناصر کے بارے میں پولیس کوجانکاری فراہم کرے تاکہ انہیں راحت دلائی جاسکے ۔اے پی آئی نیوز کے مطابق ملک میںسائبرکرائم نے سنگین رُخ اختیار کیاہے ایک سال کے دوران اس طرح کے 1.13بلین سائبرکیس درج کئے گئے ۔سب سے زیادہ کیس اتر پردیس میں پیش آئے جہاں دولاکھ افراد نے سائبر پولیس کے سامنے اپنے کیس درج کئے، جبکہ مہاراشٹرمیں ایک لاکھ تیس ہزار اور جموں وکشمیرمیں اس طرح کے ایک ہزارکیس اب تک سامنے آئے ہے ۔سائبر جرائم انجام دینے والوں کے بینک کھاتوں سے رقومات نکالنے ان کے بینک کھاتے ہینک کرنے کی کارروائیاں انجام دی ہے ۔سائبرپولیس نے لوگوں سے تلقین کی ایسے عناصرسے ہوشیار رہے جو ان کے بینک کھاتوں سے رقومات نکالنے کے مختلف حربے استعمال کررہے ہیں اورجہاں کئی سے انہیں فون کال موصول ہوجس کے بارے میںانہیں جانکاری نہ ہو اسے اٹھانے سے گریز کرے یا اس بارے میں سائبرپولیس کوجانکاری فراہم کرے ۔سائبرپولیس کے مطابق پچاس فیصدایسے لوگ ہیں جوسمارٹ فون استعمال کرتے ہیں ان کے ساتھ دوکھ دیہی ہوئی ہئے ان کے بینک کھاتے یاتوہینک کئے گئے ہے یاان سے رقومات نکالی گئی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں