Images (1)

جموں وکشمیر اعتماد کے ساتھ مقصد کی طرف بڑھ رہا ہے/ ایل جی منوج سنہا

سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے اس ماہ کے عوام کی آواز پروگرام کے دوران پی آر آئی کے ممبران، نوجوانوں، خواتین کے سیلف ہیلپ گروپس، کاروباری افراد، رضاکارانہ تنظیموں اور سماج کے ہر طبقے سے وکشت بھارت سنکلپ یاترا میں ان کی فعال شرکت کے لیے کہا۔انہوں نے کہاکہ وکشٹ بھارت سنکلپ یاترا، حکومت ہند کی اب تک کی سب سے بڑی آؤٹ ریچ پہل، جموں و کشمیر کی ہر پنچایت اور شہری مقامی باڈی کا احاطہ کرے گی۔ اسکیموں کی 100 فیصدہدف حاصل کرنے کے لیے لوگوں کی شرکت ضروری ہے، اس بات کو یقینی بناتے ہوئے کہ ان کے فوائد تمام مطلوبہ وصول کنندگان تک پہنچیں’۔ایل جی سنہا نے کہاکہ جیسا کہ ہم 2023 کے غروب آفتاب پر کھڑے ہیں اور گزرے ہوئے مہینوں پر نظر ڈالتے ہیں، ہمیں متاثر کن ترقی، دیہی اور شہری علاقوں میں زندگی کا بہتر معیار، اور چاروں طرف نمایاں ترقی نظر آتی ہے۔ میں جموں و کشمیر کو اعتماد کے ساتھ مقصد کی طرف بڑھتے ہوئے دیکھ رہا ہوں۔ شہریوں کی متاثر کن کامیابی کی کہانیوں کوشیئرکرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے ادھم پور کے ایک بزرگ شہری منشی رام جی کا خصوصی تذکرہ کیا جنہوں نے پرانی لیپ ٹاپ بیٹری اور ای ویسٹ کا استعمال کرتے ہوئے ای سائیکل بنایا ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے اپنی معذوری کے باوجود ایک کامیاب کاروباری ہونے کے اپنے مقصد کو حاصل کرنے پر سری نگر کی صدف کی ستائش کی۔ صدف کی زندگی ہمت، خود اعتمادی، محنت اور عزم کی کہانی ہے۔ اس کی قابلیت، مہارت اور علم دوسرے شہریوں کے لیے تحریک کا باعث ہے۔انہوں نے کولگام سے تعلق رکھنے والے طارق احمد گنائی کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے کہاکہ طارق نہ صرف مقامی نوجوانوں کے لیے روزگار پیدا کر رہا ہے بلکہ ایک صاف ستھرا اور زیادہ پائیدار مستقبل بھی بنا رہا ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے شہریوں سے موصول ہونے والی تجاویز کا بھی ذکر کیا۔ انہوں نے متعلقہ محکموں اور اہلکاروں کو ہدایت دی کہ وہ جموں کی پونم شرما، گاندربل کے عبدالرشید بٹ جموں کے سنجیتنا، پلوامہ کے احسان خلیق، ادھم پور کے انیل تھاپا، کٹھوعہ کے کنول سنگھ، برم کے نور الدین خان ،سری نگر کی مدینہ میر، کٹھوعہ کے سورو شرما اور پونچھ سے ذاکر حسینسے ملنے والی قیمتی معلومات پر مناسب کارروائی کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں