20240125 104425

جشن مولود کعبہ ؑکی مناسبت سے وکھرون اور گانگوہ پلوامہ میں تقریب کا اہتمام

علماء کرام نے امیر المومنین حضرت علی ابن ابیطالبؑ کی سیرت پاک پر ڈالی تفصیلی روشنی۔

پلوامہ//ولادت باسعادت امیر المومنین،شیر خدا ،فاتحہ خیبر ،باب العلم مولاءے متقیان علی ابن ابیطالب ؑ کے سلسلے میں جنوبی کشمیر کے وکھر ون اور گانگوہ پلوامہ میں عظیم الشان محافل کا انعقاد ہوا۔ جسمیں مقامی مکاتب سے وابستہ طالب علموں نے منقبت اور مدح خوانی سے سامعین کے دلوں کو محظوظ کیاجبکہ علماء کرام نے لوگوں کو سیرت امیر المومنین علی ابن ابیطالب ؑ سے آشنا کیا۔اطلاعات کے مطابق ضلع پلوامہ کے وکھرون گاوں میں مقامی مکتب کی جانب سے ولادت باسعادت امام علی ؑ کے سلسلے میں امام بارگاہ میں ایک عظیم الشان جلسے کا انعقاد ہوا جسمیں سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ۔جلسے سے خطاب کرتے ہوءے حجتہ الاسلام مولانا الطاف حسین میر نے حضرت علی ؑ سے منصوب پیغمبر اکرم ﷺ کے مشہور حدیث “انا مدینتہ العلم وعلی بابھا” کی تفصیلی توضیح کی اور کہا کہ ہم معرفت امام علیؑ کے بغیر کسی بھی علم کوتب تک نہیں سمجھ سکیں گے جبتک نہ ہم اس علم کو اس در سے لیں گے جسکا ہمیں پیغمبر اکرم ﷺ نے تقاضا کیا ہے ۔انہوں نے کہا مولا علی فرماتے تھے: میں نے نبی اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم سے ہزار علم کے باب سیکھے اور ان علوم کے ہر باب سے ہزار باب علم میں نے خود نکالے۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے خود فرمایا: میں علم کا شہر ہوں اور علی بن ابو طالب اس کا دروازہ ہے جو کوئی بھی علم کا طلبگار ہو اسی دروازے سے ائے۔ تاریخ جہان کی اکلوتی ہستی ہیں جنھوں نے سلونی قبل ان تفقدونی کا کامیاب دعوی کیا اور کوئی دینی یا دنیوی سوال بلا جواب رد نہیں فرمایا۔ اور آج تک دیگر کسی مخلوق نے ایسا دعوی نہیں کیا۔دریں اثنا گانگوہ پلوامہ میں بھی مکتب امامیہ کی جانب سے اےک عظیم الشان محفل کا انعقاد ہوا جسمیں مکتب امامیہ ننگر پورہ اور ڈانگر پورہ میں زیر تعلیم بچوں اور بچیوں نے رنگا رنگ پروگرام پیش کءے جن منقبت اورمدخوانی کے علاوہ موضوعات بھی شامل تھے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوءے حجتہ الاسلام مولانا جان نثار حسین نے کہا کہ امام علی علیہ السلام کی ولادت باسعادت کادِن درحقیقت انسانیت کی تاریخ میں ایک بے مثال شخصیت کی ولادت کادِن ہے ۔آپ ؑکی ولادت کادِن تمام مسلمانوں بلکہ تمام مظلوموںاور عدالت پسندوں کے لیے عید کادِن ہے۔ ۔ہمیں امام المتقین امام علی علیہ السلام کی مبارک ،پاکیزہ ونورانی زندگی سے درس لینا چاہیے، اگرہم آپ کی زندگی طیبہ سے درس لینے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تویہ ہمارے لیے اِس عیدکی سب سے بڑی عیدی ہوگی۔

تقریب سے منتظم مکتب امامیہ محمد صادق نے بھی خطاب کیا۔بعد میں درجہ پنجم پاس کرنے والے طالب علموں کو اسناد سے نوازا گیا۔ واضع رہے حضرت علی بن ابی طالب علیہ السلام ۱۳ رجب المرجب ۳۰ عام الفیل کو مکہ میں خانہ کعبہ میں پیدا ہوئے۔حضرت علی علیہ السلام وہ پہلی اور آخری شخصیت ہیں کہ جن کی ولادت با سعادت خانہ کعبہ میں ہوئی تاریخ میں نہ تو حضرت علی علیہ السلام سے پہلے کوئی مولود کعبہ میں پیدا ہوا اور نہ ہی ان کے بعد کسی کے بارے میں تاریخ ایسی گواہی دیتی ہے اور خانہ کعبہ میں ولادت با سعادت کا ہونا حضرت علی بن ابی طالب علیہ السلام کی بلند منزلت اور عظیم فضیلت شمار ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں