Download (8)

جسمانی طور خصوصیت کے حامل افراد کی فلاح و بہبود ہماری ترجیح

سرکاری شعبوں میں ان کو تسلیم کرنے کیلئے اقدامات اُٹھائے جاچکے ہیں ۔ لیفٹیننٹ گورنر
سرینگر//جموں کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے اتوار کے روز کہا کہ یوٹی انتظامیہ پسماندہ طبقہ جات کی فلاح و بہبود کیلئے پر عزم ہے ۔ا نہوںنے کہاکہ معذور افراد کی زندگی کو خوشحال بنانے کیلئے کئی طرح کے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ جس طرح سے عام انسان ہر سہولیات کا حقدار ہے اسی طرح جسمانی طور خصوصیت کے حامل افراد بھی حق رکھتے ہیں۔ انہوںنے معذور افراد کے عالمی یوم معذوری کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم آپ لوگوں کے ہر قدم کے ساتھ ہیں ۔ انہوں نے انہیں اعزازات سے بھی نوازا۔ 3 دسمبر کو معذوروں کے عالمی دن کے موقع پر جموں میں کلپنا کلا کیندر کی جانب سے ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ اس میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ پروگرام میں لیفٹیننٹ گورنر نے ان معذور افراد کو اعزاز سے نوازا جنہوں نے زندگی میں چیلنجوں پر قابو پا کر مختلف شعبوں میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ معذوروں کو بااختیار بنانے میں نمایاں خدمات انجام دینے والے اداروں کو بھی اعزاز سے نوازا گیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ ریاستی انتظامیہ نے ایم ٹی ایس کے عہدہ کے لیے 100 فیصد بصارت کی معذوری کو بینچ مارک معذوری کے طور پر تسلیم کرنے کے لیے اقدامات کیے ہیں، سرکاری شعبے میں مختلف عہدوں کے لیے بینچ مارک معذوری کی تعداد میں اضافہ کیا ہے، اور بہتر نتائج حاصل کرنے کے لیے 200 ریٹروفٹڈ اسکوٹیز تقسیم کیے ہیں۔ فیصد اضافہ کے لیے لیا گیا ہے۔ایل جی نے کہا کہ وہ سماج کے تمام طبقات پر زور دیتے ہیں کہ وہ جموں و کشمیر انتظامیہ کی کوششوں میں شامل ہوں تاکہ معذور افراد کو قومی دھارے میں مکمل طور پر شامل کیا جا سکے اور باوقار سماجی و اقتصادی سرگرمیوں میں ان کی موثر شرکت کو یقینی بنایا جا سکے۔انہوں نے بتایاکہ یوٹی میں جسمانی طورناخیز افراد کی فلاح و بہبود ہماری ترجیحات میں شامل ہے ۔ ایل جی نے بتایا کہ اس ضمن میں پہلے ہی اقدامات اُٹھائے جاچکے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں