Img 20240212 084030

انقلاب اسلامی ایران کی ۴۵ ویں سالگرہ کی مناسبت سے بھٹنڈی جموں میں تقریب کا اہتمام

مقررین نے انقلاب اسلامی کے ۴۵ سال مکمل ہونے پر تفصیلی روشنی ڈالی

جموں // انقلاب اسلامی ایران کی 45ویں سالگِرہ کی مناسبت سے آج بھنڈی جموں میں( یومُ اللہ )کے عنوان سے ایک پروگرام منعقد کیا گیا جو شعیہ فیڈریشن جموں، انجمن حسینی جموں، جامع امامیہ خمینی کرگل،امامیہ مشن لیہ ،انجمن امام زمان سانکو کرگل اور رحمتہ للعالمین فاؤنڈیشن کے اشتراک سے کیا گیا۔
اس پروگرام میں جموں کشمیر اور لداخ کے مختلف علماء کرام نے انقلاب اسلامی ایران اور امام خمینی کے اس عظیم انقلاب کے بارے میں اپنے تعصرات بیان کئے اور بانئ انقلاب امام خمینی کو خراج تحسین پیش کیا۔اس موقع پرحجتہ السلام والمسلمین جناب آقائ سید تقی حیدر صاحب نمائندہ دفتر مقامِ معظم رہبری دہلی نو نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی اس کے علاوہ حجتہ السلام والمسلمین مولانا سید زوار حسین جعفری صاحب امام جمعہ بھنڈی،حجتہ السلام والمسلمین مولانا سید لیاقت علی موسوی صاحب کشمیری، حجتہ الاسلام والمسلمین مولانا جواد حبیبی صاحب، حجۃ الاسلام والمسلمین مولانا شیخ زاکری صاحب، حجۃ الاسلام والمسلمین مولانا انور حسین انوری صاحب، حجۃ الاسلام والمسلمین مولانا شیخ مختارصاحب،رحمتہ للعالمین فاؤنڈیشن کے چیئرمین شیخ فردوس علی، شعیہ فیڈریشن جموں عاشق حسین خان صاحب،امامیہ فیڈریشن کشمیر کے سیکرٹری محمد اشف خان صاحب۔رحمتہ للعالمین فاؤنڈیشن کے چیئرمین شیخ فردوس علی نے بھی امام خمینی اور انقلاب اسلامی ایران کی سراہنا کرتے ہوئے کہا کہ امام خمینی جیسا انقلاب آج تک کسی نے نہیں لایا ۔45 سال پہلے ہمیں یہ انقلاب دیکھنے کو ملا جو امام خمینی نے ایران کے اندر لایاجس کی رہتی دنیا تک مثال نہیں ملے گی۔ایسے انقلاب لانے کے لئے پرہیز گاری،خلوص اور تقوی۱ کا ہونا لازمی ہے۔امام خمینی نے اللہ کے نظام کو قائم کرنے ،انسانی حقوقوں کی پامالی ہونے کے خلاف اور شاہی نظام کے خاتمے کیلئے انتھک کوشش اور پر عظم ارادے سے اس انقلاب کو برپا کیا۔جس کی وجہ سے نہ صرف ایران بلکہ دنیا بھر کے تمام مسلمانوں کا سر فخر سے بلند ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں