Download (8)

آئینی بینچ کا370کے بارے میں صاد ر کیاگیافیصلہ ہر ایک کے لئے قابل قبول ہوناچاہئے /ترن چگ

عام شہریوں اور فوجی جوانوں کے جان بحق ہونے میں ملوث افراد کوبخشا نہیں جائیگا /روندررینا

سرینگر // سپریم کورٹ آف انڈیا کے آئینی بینچ کی جانب سے 370-35Aکے بارے میں سنائے گئے فیصلے کوہر سیاسی پارٹی کے لئے قابل قبول ہونے کا عندیہ دیتے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی کے جنرل سیکریٹری امور کشمیرکے انچارج نے کہا کہ 370-35Aکا اب ماضی کاقصہ بن گیاہے ۔این سی پی ڈی ڈی بار بار اس مسلے پرسیاسیت کررہی ہے او راین سی کے صدر کو پاکستان کے ساتھ بات چیت کرنے پرناچنا نہیں چاہے۔ جموں و کشمیراب ایک نئے دور میں داخل ہوچکاے جہاں لوگ اب مسائب ومشکلات سے باہرنکل آئے ہیں اوروہ ترقی کی منزلوںپرجانے کے لئے اپنی خدمات انجام دینا چاہتے ہیں ۔ این سی کے صدر سرینگر گاندربل اور بڈگام حلقے کے ممبرپارلیمنٹ ڈاکٹرفاروق عبدالللہ کی جانب سے بار بار پاکستان کے ساتھ بات چیت کرنے کے بیانات پر پلٹ وار کرتے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی کے سیکریٹری امورکشمیرکے انچارج ترن چگ نے کہاکہ پاکستان کے ساتھ بات چیت ممکن نہیں گولی اور بولی ایک ساتھ نہیں ہوسکتی ہے۔ پاکستان نے ملک کے خلاف درپردہ جنگ شروع کررکھی ہے اور بھارت پچھلے تین دہائیوں سے پاکستان کی جانب سے مسلط کئے گئے درپردہ جنگ کاسامناکررہاہے ۔امور کشمیرکے انچارج نے کہاکہ بھارت کسی بھی ملک کے ساتھ جارحیت کے عزائم نہیں رکھتاہے اوراگرہم ماضی پرنظردوڑائے توآنجہانی اٹل بہاری واجپائی امن بس لے کرلاہورپہنچ گئے موجودہ وزیراعظم بغیرکسی پروگرام کے پاکستان پہنچ گئے بدلے میں ہمیں ممبئی حملہ، پٹھان کوٹ ائرپورٹ ،اوڑی برگیڈ ،اونتی پورہ حملے ملے ایسے پاکستان کے ساتھ بات چیت نہیں ہوسکتی۔ پچھلے ایک سال سے پونچھ، راجوری میں پاکستان کی مدد سے عسکریت پسندوں کے زریعے دودرجن کے قریب فوجی جوانوں افسروں کی جانیں لے لی گئی اسے زیادہ شہری اپنی جانوں سے ہاتھ دھوبیٹھے ایسے پاکستان کے ساتھ موجودہ حکومت بات چیت نہیں کرسکتی ہے ۔نیشنل کانفرنس کے صدر کوچاہئے کہ وہ پاکستان کے رنگوں میں رنگ بھرنے کی کوشش ناکرے او رپرناچنے سے گریز کرے ۔مختلف سیاسی پارٹیوں کے لیڈروںا وروکلاء کی جانب سے سپریم کورٹ آف انڈیاکے آئینی بینچ کی طرف سے صادرکئے گئے فیصلے کے بعد نظرثانی کی درخواست دائر کرنے کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب دیتے ہوئے ترن چگ نے کہا 370کے بارے میں آئینی بینچ نے جوفیصلہ سنایاہے وہ ہرایک سیاسی پارٹی او رجموں وکشمیرکے لوگوں کے ساتھ ساتھ قابل قبو ل ہوناچاہئے 5A 370-3اب ماضی کاقصہ بن گیاہے اس پرسیاست کرنے یا عوام کو گمرہ اکرنے کی ضرور ت نہیں ہے ۔ادھربی جے پی کے سٹیٹ پریذڈنٹ روندر رینا نے مارے گئے تین عام شہریوں کے لواحقین کے ساتھ تعزیت اور یکجہتی کااظہار کیا۔انہوںنے اسپتال میں زخمیوں کی عیادت کے بعد زررائع ابلاغ سے گفتگوکے دوران کہاکہ فوجی جوانوں اور عام شہریوںکی ہلاکتوں میں جوکوئی بھی ملوث پایاجائیگا اسے کیفرکردارتک پہنچایاجائیگا ۔وزیردفاع اور جموں وکشمیرکے ایل جی نے متاثرہ کنبوں کویقین دلایاہے کہ قانون اپنا کام کریاگاا س پرسبہوں کویقین اور اعتمادکرناچاہئے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں